Hakim Tahir Abbas 32

گرما گرم مچھلی کھانے میں بھی لذیذ ہے اور سردی سے بھی بچنے میں مدد دیتی ہے۔حکیم طاہر عباس

کلرسیداں (عبدالعزیزپاشا )سرد موسم اور ٹھنڈی ہوائیں ایسے میں سردی سے بچنے کے لیے گرما گرم مچھلی کھانے کو ترجیج دینی چاہیے، جو لذیذ بھی اور غذائیت سے بھرپور سردی کو دور بھاگنے میں مدد دیتی ہے۔ان خیالات کااظہار کلرسیداں معروف حکیم طاہر عباس نے نمائندے سے گفتگو کر تے ہو ئے کیا ان کا کہنا ہے کہ سردی اور مچھلی ایک دوسرے کا جوڑ ہے۔ مچھلی گھر میں بنائی جاسکتی ہے انہوںلوگ سردی سے بچنے کے لئے اپنی خوراک میں طرح طرح کے میوہ جات ،مزے مزے کے سوپ،پکوان اور مچھلی کا استعمال بڑھا دیتے ہیں ۔لیکن آج میرا موضوع مچھلی سے متعلق ہے۔ ہمارے ہاں کئی قسم کی مچھلیاں پائی جاتی ہیں۔ان میں مشہور اقسام بام،رہو، گلفام، ٹراٹ، مشاہیر، سلور، سنگھاڑا اور تھیلہ قابل ذکر ہیں۔ خیر مچھلی کی ہر اقسام میں اللہ تعالی نے ہمارے لئے بے شمار فوائد چھپا رکھے ہیں جن سے ہمیں بھر پور فائدہ اٹھانا چاہیئے تاکہ ہم تندرست و توانا رہ سکے مچھلی میں پوٹاشیم، فولاد،آئیوڈین،پروٹین،وٹامن اے،وٹامن 12 ، وٹامن ڈی ،سلینیئم،فاسفورس اور میگنیشئم پایا جاتا ہے۔اس میں پروٹین 60%، فیٹ 10%، وٹامن 181% 12،وتامن اے 50% ، سلینئیم 67% ، فاسفورس 33% اور میگنشیم 16 % موجود ہوتا ہے۔اس سے آپ ہوتا ہے۔اس سے آپ اندازہ لگا سکتے ہیں کہ مچھلی ہمارے لئے کتنی اہم غذا ہے۔ ہمیں اسے صرف سردیوں میں نہیں بلکہ پورا سال ہی ہفتے میں کم از کم ایک بار ضرور استعمال کرنا چاہئے تب ہی ہم اس سے فوائد حاصل کر سکتے ہیں بے شک آپ تھوڑی مقدار میں کھائیں لیکن اسے ہفتے میں ایک بار ضرور کھائیں