92

کہوٹہ منشیات فروشوں کا گڑھ بن گیا

کہوٹہ منشیات فروشوں کا گڑھ بن گیا تحصیل کہوٹہ میں سرعام نشہ فروخت کیا جانے

تحصیل کہوٹہ میں سرعام نشہ فروخت کیا جانے لگا

کہوٹہ پولیس کے ملازمین منشیات فروشوں کے ساتھ رابطے میں ذرائع نوجوان کو نشے کا عادی بنایا جانے لگا تفصیلات کے مطابق تحصیل کہوٹہ میں گلی کوچوں اور گاؤں میں منشیات فروش سرعام نوشہ بانٹنے میں مصروف ذرائع کے مطابق کہوٹہ تھانے میں عرصہ دراز سے تعینات پولیس ملازم منشیات فروشوں کے ساتھ رابطے میں ایس ایچ او کہوٹہ منشیات فروشوں کے خلاف کاروائی کرتے ہیں تو ان کو غلط گائیڈ کیا جاتا ہے منشیات فروشوں کی جگہ پر نہیں جایا جاتا لیکن غریب دیہاڑی دار کے گھر میں گھس کر ان کے ساتھ بدتمیزی اور غلط کیسے پیش آنا اور تھانے سے نکلنے سے پہلے ہی منشیات فروشی کو اطلاع دے دی جاتی ہے وہ محفوظ مقامات پر منتقل ہو جاتے ہیں ان ملازمین کی تصاویر اور ان کے نام آویزاں کر دیئے جائیں گے ایس ایچ او کہوٹہ عمر صدیق گجر سے اہل علاقہ نے اپیل کرتے ہوئے کہا تھانے میں موجود تمام ملازمین کے موبائل ڈیٹا بھی چیک کروائے جائیں یہی نہیں راولپنڈی اور اسلام آباد میں مختلف گینگ وار کو بھی تیار کرنے کی تربیت دی جاتی ہے جن کے سرگنا کہوٹہ مری اور کوٹلی ستیاں میں محفوظ مقامات پر بیٹھ کر نوجوانوں کو پہلے نشے کی لعنت پر عادت ڈالتے ہیں پھر انہی سے چوری اور ڈکیتی لفٹر گینگ قبضہ مافیا کے کاموں میں استعمال کیا جاتا ہے جبکہ جگہ جگہ پر منشیات کا دھندہ کرنے والوں کے خلاف جامع حکمت عملی بنائی جائے اور نوجوان نسل نشے جیسی لعنت سے بچایا جا سکے ،،،،

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں