roti-2 23

کہوٹہ شہر میں نان با ئیو ں نے کا غذ برابر روٹی فرو خت کرنی شروع کردی

کہوٹہ (ملک محمو د اختر سے)کہوٹہ شہر میں نان با ئیو ں نے کا غذ برابر روٹی فرو خت کرنی شروع کردی،130گرام وزن کے بجائے70سے80گرام وزن رو ٹی اور نان فرو خت ہورہا ہے جبکہ نان اور رو ٹی کی قیمتیں بھی بڑھا دی گئی ہیں،مرکزی جامع مسجد روڈ، کلرچوک، چھنی با زا ر، تھانہ روڈ، پنجاڑ روڈ، مٹو ر روڈ، بو ہڑ بازا ر، تحصیل چوک اور کلر روڈ چھنی اعوان کے علاقوں تندور مالکان نے عوام کے گلے پر چھریا ں پھرنی شرو ع کر دی ہیں، مزدور طبقہ فاقہ کشی پر مجبو ر ہیں، کاغذ برابر رو ٹی عام آدمی5سے6کھا جاتا ہے،جبکہ سرکاری وزن کے مطابق وزن کے مطابق130گرام رو ٹی عام آدمی دو یا تین کھا سکتا ہے،عوامی حلقوں نے بتا یا کہ ہم نے متعدد با ر کشا یا ت کیں مگر کسی قسم کا ایکشن نہیں ہو رہا بلکہ شکایا ت کرنے والے کے رشتہ دا ر دوکانداروں کے چالان اور انتقا می کاروائیوں کا نشانہ بنایا جاتا ہے، عوامی حلقوں نے بتا یا کہ عوام ڈرکے مارے شکایا ت کرنے سے ڈرتے ہیں شہر میں چیک اینڈ بیلنس کا کوئی نظا م نہیں ایک نائب قا صد ٹی ایم اے کا جرمانے کرتا ہے اور شہر بھر میں چالیس سے پچاس ریڑھیا ں لگی ہیں، ذرائع کے مطا بق فی ریڑھی کا بھتہ وصو ل کیا جاتا ہے، ٹر یفک کا نظا م صر ف ریڑھیوں کی وجہ سے خراب ہے، ٹر یفک پو لیس کو طر ح طر ح کے مسائل ہیں، سیا سی دباؤ علیحدہ اور ریڑھی بانوں کا پر یشر علیحدہ، عوامی حلقوں نے اعلی حکام سے فو ری نو ٹس لینے کا مطا لبہ کیا ہے۔