Kashmir Exploitation Day 22

جہلم کشمیر کے یوم استحصال،،،

کشمیر کے یوم استحصال کے موقع پر ضلعی انتظامیہ جہلم کے زیر اہتمام ڈی سی دفتر تا وائے کراس چوک تک ریلی نکالی گئی جس کو مظفرآباد تا سری نگر سے نکلنے والی قراردیا گیا۔تفصیلات کے مطابق کشمیریوں پر بھارتی بربریت اور فوجی محاصروں کو ایک سال مکمل ہونے پر آج5 اگست کو ڈپٹی کمشنر راؤ پرویز اختر،ایم این اے چوہدری فرخ الطاف،ایم پی اے راجہ یاور کمال کی زیر قیادت ڈی سی دفتر تا وائے کراس چوک احتجاجی ریلی نکالی گئی۔آج نکالی گئی احتجاجی ریلی کا مقصد بھارتی بربریت کا خاتمہ اور کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنا ہے۔اس موقع پر شرکاء کالے جھنڈے اٹھائے،کالی پٹیاں باندھے اور کالی ٹوپیاں پہن کرریلی میں شریک ہوئے۔اس موقع پر رکن قومی اسمبلی چوہدری فرخ الطاف، رکن صوبائی اسمبلی راجہ یاور کمال، اے ڈی سی جی سید نذارت علی، اے ڈی سی ایف اینڈ پی ربنواز منہاس،اے سی جہلم ذوالفقار احمد،سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر وسیم اقبال، ریسکو1122 انچارج ڈاکٹر فیصل محمود،چوہدری فرخت ضیا کمال سیمت مختلف سرکاری و نجی اداروں کے سربراہان نے شرکت کی۔ انکے ساتھ ساتھ سماجی کارکنان، تاجر تنظیموں کے نمائندوں اور زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد کی ریلی میں شرکت کی۔اس موقع پر ڈی سی جہلم نے بتایا ہے کہ بھارتی پارلیمنٹ نے کشمیر کی متنازعہ حیثیت ختم کرنے کے لئے شب خون ماراہے جس کو ہم ہر گز برداشت نہیں کریں گے۔اس موقع انہوں نے کہا ہے کہ پوری دنیا میں انصاف پسند عوام سراپا احتجاج ہے،جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے خلاف یوم استحصال کے موقع پر پاکستان میں ہر سطح پر احتجاج جاری ہے۔ و ہاں موجود دیگر معززین نے کہا ہے کہ نریندر مودی نے مقبوضہ کشمیر کے عوام کے حقوق پر ڈاکہ ہے،پاکستان کے جس نئے سیاسی نقشے کی کابینہ نے منظورہ دی وہ اقوام متحدہ میں پیش کیا جائیگا۔وزیر اعظم کی قیادت میں پوری دنیا کو پیغام دیا ہے کہ کشمیریوں کو حق خود ارادیت مل کر رہے گا۔وزیراعظم پاکستان عمران خان کی قیادت میں مقبوضہ کشمیر میں حق خود ارادیت کے لیے ہر سطح پر آواز بلند کی جارہی ہے۔ڈی سی جہلم نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم و ستم کی شدید مذمت کی جا ری ہے اور کشمیری بھائیوں کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔