ppp murree 24

سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کے مشیرو ایڈوائزر میا ں خرم  رسول 9سال بعد اڈیالہ جیل سے رہاہو گئے

 راولپنڈی پاکستان پیپلز پارٹی کے  مرکزی رہنماء و سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کے مشیرو ایڈوائزر میا ں خرم  رسول 9سال بعد اڈیالہ جیل سے رہاہو گئے ۔ جیل سے رہائی کے موقع پر کارکنوں نے ان کا استقبال کیا کارکنا ن نعرے بازی کرتے رہے  اور ان پرگل پاشی بھی کی ۔ جیل سے رہائی کے موقع پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے میاں خرم رسول کا کہنا تھا کہ مجھے پاکستان پیپلز پارٹی سے وفاداری کی سزا دی گئی۔ مجھے وعدہ معاف گواہ بنانے کے لیے بھی دباو ڈالا گیا ۔ لیکن میں ذوالفقار علی بھٹو اور بے نظیر بھٹو کے نظریے پر قائم رہا اور کوئی سمجھوتہ نہیں کیا۔ نیب کا قانون ایک کالا قانون ہے ۔ میں نے 9 سال جیل میں رہتے ہوئے بھی ذوالفقار علی بھٹو اور شہید بے نظیر بھٹو کے نظریے کو نہیں چھوڑا ۔ میاں خرم رسول کا کہنا تھا کہ نیب کے پراسیکوٹر اپنے مقدمات کو طویل کرتے ہیں ۔ میرے مقدمے میں بھی ساڑھے آٹھ سال لگائے گئے ۔ مجھ پر آج تک کوئی بھی جرم ثابت نہیں کیا جا سکا ہے ۔ میاں خرم رسول کا کہنا تھا کہ میں نے 9سال میں 1600پیشاں بھگتی ہیں ۔مجھے پاکستان کی عدالتوں اور اللہ سے انصاف کی امید ہے ۔ انہوںنے کہا کہ میں تمام کارکنا ن کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ وہ آج میرے استقبال کے لیے اڈیالہ جیل میں آئے۔ تمام کارکنان کو دیکھ کر میں اپنے 9 سال بھول گیا ہوں ۔ میاں خرم رسول کا کہنا تھا کہ نیب کا قانون ایک کالا قانون ہے ۔ حکومت اپنا گیئر لگاتی ہے لیکن نیب کے پاس جب کیس جاتا ہے تو وہ اپنا گئیر لگاتی ہے مجھ پر جو بھی مقدمات بنائے گئے وہ بے بنیاد ہیں میں پہلے دن سے آج تک اپنے ایک ہی موقف پر قائم ہوں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں