سیکرٹری 25

تمام اخبارات کے اشتہارات کے بقایاجات کی ادائیگی کو100فیصد یقینی بنانے کیلئے

اسلام آباد وفاقی سیکرٹری اطلاعات اکبر حسین درانی نے کہا ہے کہ تمام اخبارات کے اشتہارات کے بقایاجات کی ادائیگی کو100فیصد یقینی بنانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کیے جائیں گے اور کسی میڈیا ہائوس کا ایک روپیہ بھی ڈوبنے نہیں دیں گے۔ اس امر کی یقین دہانی سی پی این ای(رجسٹرڈ ایس ای سی پی) اسلام آباد کے کنوینئر ممتاز حسین بھٹی ،سید تبسم عباس شاہ اور آغا عبدالغفور طاہرپر مشتمل تین رکنی وفد سے ملاقات کے دوران کرائی۔سی پی این ای وفد نے وفاقی سیکرٹری اطلاعات کو میڈیا انڈسٹری کو درپیش مسائل خصوصاً اشتہارات کے بقایا جات کے طریقہ کار کے حوالے سے اپنے اراکین کی تشویش سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے کچھ ایڈورٹائزنگ ایجنسیز سے اخبارات کے بقایاجات کے چیکس لیے بغیر انہیں کل رقم کی چیک جاری کر دیے گئے ہیں حالانکہ یہ طریقہ کار طے کیا گیا تھا کہ ایڈورٹائزنگ ایجنسیز سے 15%ایجنسی کمیشن کاٹ کر بقیہ رقم متعلقہ اخبارات کے نام چیک لینے کے بعد رقوم کی ادائیگی کی جائے گی۔اس صورتحال کے باعث حکومت کی طرف سے ادائیگی کے بعد بھی اخبارات کے بقایا جات کی ادائیگی ماضی کی طرح خطرے میں رہے گی جس پر سیکرڑی اطلاعات نے فوری طور پر پرنسپل انفارمیشن آفیسر پریس انفاریشن ڈیپارٹمنٹ کو ہدایت کی کہ تمام اخبارات کے اشتہارات کے بقایا جات کی ادائیگی کو 100فیصد یقینی بنانے کیلئے فول پروف انتظامات کیے جائیں،15فیصد کمیشن ایجنسی اور 85فیصد متعلقہ میڈیا ہائوسز کا حق ہے ۔اس حوالے سے کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔انہوں نے وفد سے مزید کہا کہ جہاں بھی اشتہارات کی ادائیگیوں سمیت کسی قسم کی بے ضابطگی ہو گی اس کی نشاندہی کریں ،وزارت اطلاعات میڈیا ہائوسز کے تمام تر تحفظات دور کرے گی۔جن میڈیا ہائوسز کو بقایاجات کی ادائیگی عید سے قبل نہ ممکن ہو سکی انہیں عید کے فوراً بعد ادائیگی یقینی بنائی جائے گی۔بقایا جات کی ادائیگیوں کے حوالے سے کئی اجلاس ہوئے ہیں جس کے بعد وزیر اعظم کی منظوری کے بعد میڈیا ہائوسز کو اشتہارات کے بقایا جات کی ادائیگیوں کے عمل کو شفاف بنانے کیلئے سسٹم بنا دیا ہے جس کے بعد کسی بھی میڈیا ہائوسز کی رقوم دبائی نہیں جا سکیں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں