Sardar Masood Khan 70

ایوان صدر مظفرآباد تجوید القرآن ٹرسٹ کے اجلاس

مظفرآباد:آزاد جموں و کشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ آزاد ریاست میں قرآنی تعلیمات عام کرنے اور قرآن پاک کو نئی نسل کے سینوں میں محفوظ کرنے کی ذمہ داری پر مامور اساتذہ کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے اساتذہ کے مسائل حل کرنے کے لیے پر عزم ہیں اور اس سلسلے میں تجوید القرآن ٹرسٹ کے تحت قائم مدارس دینیہ کے اساتذہ کے اعزازیہ میں اضافہ کر دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آنے والے سالوں میں اس میں مزید اضافہ کیا جائے گا۔ یہ بات انہوں نے ایوان صدر مظفرآباد تجوید القرآن ٹرسٹ کے اجلاس کے بعد گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں وزیراعظم آزاد کشمیر جو ٹرسٹ کے شریک چیئرمین بھی ہیں کے علاوہ وزیر برائے اوقاف، زکواۃ و عشر راجہ عبدالقیوم، سیکرٹری اوقاف سردار جاوید ایوب اور ٹرسٹ کے دیگر ارکان نے بھی شرکت کی۔ صدر آزاد کشمیر نے کہا کہ تجوید القرآن ٹرسٹ کے تحت چلنے والے مدارس کے اساتذہ کے اعزازیہ میں اضافہ علما و مشائخ کا دیرینہ مطالبہ تھا اور ہماری اپنی خواہش بھی تھی کہ ان اساتذہ کے اعزازیہ میں اضافہ ہو تاکہ وہ پوری محنت، لگن اور ذہنی یکسوئی کے ساتھ بچوں کو تجوید اور ناظرہ کی تعلیم دیکر ان کا تعلق قرآن کے ساتھ جوڑیں انہوں نے کہا کہ پوری قوم قاری حضرات اور قاریات کی شکر گزار ہے کیوں کہ وہ قرآن حکیم کو بچوں کے سینوں میں سمو کر حفاظت قرآن کا عظیم فریضہ سر انجام دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم آزاد کشمیر کی بھی خواہش تھی کہ اس عظیم دینی فریضہ کی انجام دہی میں مصروف اساتذہ کے اعزازیہ میں اضافہ ہو چنانچہ ٹرسٹ نے فیصلہ کیا ہے کہ یہ اعزازیہ بارہ ہزار سے بڑھا کر سولہ ہزار کیا جائے۔ قبل ازیں مبلغ بارہ ہزار اعزازیہ دیا جاتا تھا جس میں آٹھ ہزار ٹرسٹ مہیا کرتا تھا ور چار ہزار مقامی کمیٹی اور اعزازیہ میں مزید اضافہ کے بعد مبلغ تین ہزار روپے ٹرسٹ مہیا کرے گا جبکہ پندرہ سو روپے مقامی کمیٹی مہیا کرے گی اور اس طرح اس اضافے کے بعد ٹرسٹ کے تحت چلنے والے مدارس کے اساتذہ سولہ ہزار پانچ سو روپے ماہوار فی کس اعزازیہ حاصل کریں گے۔ اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ ٹرسٹ کے مدارس کے معائنہ اور رپورٹنگ کے سلسلہ میں ایک سو مدارس کے لیے ایک انسپکٹر قاری تعینات کیا جائے گا اور اس مقصد کے لیے انسپکٹر قاری حضرات کی تعیناتیاں ذرائع آمدن میں اضافہ کے بعد عمل میں لائی جائیں گی۔ گھریلو بجلی کے بل میں مبلغ 10 روپے فی بل تجوید القران ٹرسٹ سیس کے حوالے سے تجویز کے بارہ میں فیصلہ کیا گیا کہ اس سلسلہ میں مناسب قانون سازی کے بعد فیصلہ کیا جائے گا۔