Sindh tourist-places 71

سندھ حکومت کا صوبے کے سیاحتی مقامات کی اسٹڈی کروانی کا فیصلہ

سندھ حکومت کا صوبے کے سیاحتی مقامات کی اسٹڈی کروانی کا فیصلہپبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے زریعے گورکھ ہل، کینجھر ، دریائے سندھ، ننگرپارکر اور صوبے کی ساحلی پٹی پر سیاحت کو فروغ دیا جائے گا۔ چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ

کراچی…چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ نے کہا کہ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے زریعے گورکھ ہل، کینجھر ، دریائے سندھ، ننگرپارکر اور صوبے کی ساحلی پٹی پر سیاحت کو فروغ دیا جائے گا، انہونے کہا کہ صوبے میں سیاحت کے حوالے سے بہت پوٹینشل ہے۔ یہ بات انہونے محکمہ ثقافت اور سیاحت کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کی۔ اجلاس میں سیکریٹری ثقافت و سیاحت غلام اکبر لغاری، سیکریٹری پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ، سیکریٹری امپلیمینٹیشن اور کوارڈینیشن اور سندھ حکومت کے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ یونٹ کے افسران نے شرکت کی۔ اجلاس میں فیصلا کیا گیا کہ صوبے کے سیاحتی مقامات کی فیزیبلٹی اسٹڈی کروائی جائے گی اور پرائیویٹ اداروں کے ساتھ مل کر صوبے کے نئیں سیاحتی مقامات کی بھی نشاہدہی کی جائے گی۔ اجلاس میں چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ نے کہا کہ گورکھ ہل، کینجھر ، دریائے سندھ، ننگرپارکر اور صوبے کی ساحلی پٹی پر سیاحت کو فروغ دیا جائے گا۔ انہونے مزید کہا کہ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے زریعہ صوبے کے سیاحتی مقامات کو مزید بہتر کیا جائے گا۔ ممتاز علی شاہ نے مزید کہا کہ صوبے میں سیاحت کا بہت پوٹینشل ہے لبِ مہران اور المنظر پر بھی کام کیا جائے گا۔ انہونے محکمہ ورکس اینڈ سروسز کو ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ رنی کوٹ اور ننگرپارکر کے راستوں کی جلد مرمت کی جائے تا کہ وہاں آنے والے سیاحوں کو کسی مشکل کا سامنا نا کرنا پڑے۔ اجلاس میں سیکریٹری ثقافت و سیاحت غلام اکبر لغاری نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ گورکھ اور لبِ مہران کی فیزیبلٹی اسٹڈی کی گئی ہے، موہن جو دڑو میں تھیم پارک کی تعمیر، سہون شریف، کینجھر، کارونجھر اور دیگر مقامات پر آنے والوں سیاحوں کے لئے ہوٹل کی تعمیر زیر غور ہے۔ اجلاس میں چیف سیکریٹری سندھ نے آئندہ اجلاس میں گورکھ ہل اور لب مہران کی فیزیبلٹی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی، انہونےپبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ یونٹ کے افسران کو ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے پالیسی بورڑ کے ایجنڈے میں بھی سیاحت کے بھی ایجنڈے شامل کئے جائیں۔