President Arif Alawi 15

نیشنل سکول آف پبلک پالیسی کے بورڈ آف گورنرز کے اجلاس

اسلام آباد۔صدر مملکت عارف علوی نے کہا ہے کہ سرکاری افسران کا پاکستان کو درپیش چیلنجزکا مقابلہ کرنے کے لئے بہترین بین الاقوامی پالیسیوں سے ہم آہنگ ہونا ضروری ہے۔ انہوں نے یہ بات بدھ کو نیشنل سکول آف پبلک پالیسی کے بورڈ آف گورنرز کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں وزیر برائے انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں مزاری ، سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ ڈاکٹر اعجاز منیر ، ریکٹر این ایس پی پی اور بورڈ کے دیگر ممبران نے شرکت کی۔ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ نیشنل اسکول آف پبلک پالیسی سرکاری افسران کی استعدادِکار میں اضافے کے لئے آن لائن کورسز کا آغاز کرے ۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری افسران کا پاکستان کو درپیش چیلنجزکا مقابلہ کرنے کے لئے بہترین بین الاقوامی پالیسیوں سے ہم آہنگ ہونا ضروری ہے۔ اس موقع پر صدر مملکت کو بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ این ایس پی پی نے مڈ کیریئر مینجمنٹ کورس کی مدت کو دو حصوں میں تقسیم کردیا ہے، سرکاری افسران کی 10 ہفتوں کی ٹریننگ این ایس پی پی جبکہ 4 ہفتوں کی ٹریننگ متعلقہ سپیشلائزڈ ٹریننگ ادارے کرائیں گے۔ بورڈ آف گورنرز نے سرچ کمیٹی تشکیل کر دی جو کہ ڈینزکے انتخاب کے لئے معیار اور مسودہ شرائط و ضوابط تیار کرے گی۔ بورڈ نے این ایس پی پی کے گریڈ17 کے افسران کی ترقی کے معاملات سے متعلق فیصلوں کی توثیق کی۔