cpo-pindi 53

سی پی او فیصل رانا کی طرف سے راولپنڈی کے ”ٹیرر“ گروپوں کے خلاف کارروائی جاری

راولپنڈی:سی پی او فیصل رانا کی طرف سے راولپنڈی کے ”ٹیرر“ گروپوں کے خلاف کارروائی جاری،پولیس نے مختلف قانون شکن گینگزکے17ملزمان گرفتار کر لئے،ملزمان سٹریٹ کرائم، بھتہ خوری،ناجائز قبضہ کرنے اور منشیات فروشی جیسے سنگین جرائم میں ملوث ہیں،تفصیلات کے مطابق سٹی پولیس آفیسر ڈی آئی جی محمد فیصل رانا نے راولپنڈی کے8”ٹیرر“ گروپوں کے خلاف آپریشن کے حوالے سے فالو اپ لینے کا سلسلہ جاری رکھا،گزشتہ روز پوٹھوہار ڈویژن میں سب سے زیادہ ملزمان گرفتار ہوئے،ایس پی پوٹھوہار سید علی نے طلب کئے جانے پر سی پی او فیصل رانا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ایس ایچ او مورگاہ سب انسپکٹر اعزاز عظیم نے ”مافیا راج“ گینگ کے سرغنہ راجہ فیضان عرف راجہ فیضی اور اس کے ساتھی چوہدری عمر کو گرفتار کیا ان ملزمان کی گرفتاری پولیس کے لئے ایک چیلنج تھی ملزمان سیاسی جلسوں میں ہوائی فائرنگ کرنے کا باقاعدہ ”پیشہ“ اختیار کئے ہوئے تھے،جڑواں شہروں راولپنڈی اور اسلام آباد میں سیاسی جلسوں کے دوران ہونے والی ہوائی فائرنگ کے اکثر واقعات میں یہی گینگ ملوث تھا،یہ لوگ ہوائی فائرنگ کی ویڈیو اور تصاویر بنا کر سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کر کے ایک طرف قانون کو چیلنج کرتے تھے جبکہ دوسری طرف معاشرے میں دہشت پھیلاتے تھے،انہوں نے بتایاکہ تھانہ ائیر پورٹ پولیس نے ”نور7“ گینگ کے ملزمان عمران سعید،اشتیاق،بشیر خان،شفیق خالد جاوید،طارق محمود،کامران خان اور جمیل کھوکھر کو گرفتار کیا یہ ملزمان سٹریٹ کرائم،قبضہ مافیامیں ملوث ہونے کے علاوہ سوشل میڈیا پر اپنی قانون شکنیوں کی تشہیر میں خاصا متحرک تھا،نصیر آباد پولیس نے ”مافیا راج“ گینگ کے فیضان عرف فیضی،وحید خان،مجیب خان،عبد اللہ خان اور حبیب اللہ خان عرف پالشی کو گرفتار کیا یہ ملزمان بھی پیسے لے کر سیاسی جلسوں اور ریلیوں میں ہوائی فائرنگ کرتے تھے جس سے کئی افراد جاں بحق اور زخمی ہو جاتے تھے،تھانہ کینٹ پولیس نے”786سرکار“ گینگ کے نوید شاہ کو گرفتار کیاجو شادی کی تقریبات میں ہوئی فائرنگ کرنے اور اسلحہ کی نمائش کر کے معاشرے میں خوف و ہراس پھیلاتا تھا،تھانہ سول لائن پولیس نے ”222“ کے نیک محمد کو گرفتار کیا جو قبضہ مافیا،منشیات فروشی اور قمار بازی کے اڈے چلانے میں ملوث ہے،ایس پی نے بتایا کہ گرفتار ملزمان سے پولیس نے بھاری مقدار میں ناجائز اسلحہ بھی بر آمد کیا ہے،سی پی او نے ان ملزمان کی گرفتاری پر ایس پی پوٹھوہار سید علی اور ان گرفتاریوں میں نمایاں کردار ادا کرنے والی پوٹھوہار ڈویژن کی پولیس ٹیم کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ وہ ملزمان کس قدر خطرناک ہیں جو پیسوں کی خاطر سیاسی جلسوں میں ہوائی فائرنگ کرتے ہیں اور پھر ان کی تشہیر سوشل میڈیا پر کرتے ہیں ایسے ملزمان کو گرفتار کرنے والے پولیس والوں کو میں خود انعامات دوں گا،راولپنڈی کی عوام ان ”ٹیرر“ گروپوں کی گرفتاری سے مطمئن ہیں،عام شہریوں کو کہنا ہے کہ ان ”ٹیرر“ گروپوں نے قانون کو چیلنج کر کے معاشرے میں افراتفری پیدا کر رکھی تھی،سی پی او نے کہا کہ چاہے ان ”ٹیرر“گروپوں کے ارکان پاتال کی گہرائیوں میں جا چکے ہیں ہمیں انہیں وہاں سے نکال کر قانون کے شکنجے میں کسنا ہے،ان ”ٹیرر“ گروپوں کے آخری ملزم کی گرفتاری تک نہ میں خود چین سے بیٹھوں گا اور نہ ہی کسی پولیس والے کو چین سے بیٹھنے دوں گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں