52

مری میں سب سے بڑا مسئلہ پارکنگ کا نہ ہونا ہے

مری(خمیراہ صدیق)مری اسلام آباد سے صرف 40 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے اور ایک انتہائی خوبصورت سیاحتی مرکز ہے جو اللہ سبحان و تعالیٰ کی تخلیق کا وہ کرشمہ ہے جسے دیکھ کر پوری دنیاتعریف کئے بغیر نہیں رہ سکتی ایک گھنٹے کی ڈرائیوکے بعد 44 سینٹی گریڈ سے نکل کر 18 سے 22 ڈگری کا قدرتی موسم انجوائے کرتے ہیں یہ اللہ کا فضل وکرم ہے کہ مری میں ہر روز بارش کی وجہ سے اسلام آباد کے لوگ ٹھنڈے موسم کے مزے لیتے ہیں پنڈی اور اسلام آباد کے لوگ ٹھنڈے موسم سے لطف اندوز ہونے کیلئے اپنی فیملیوں کے ساتھ مری کارخ کرتے ہیں لیکن مری میں سب سے بڑا مسئلہ پارکنگ کا نہ ہونا ہے سیاح لاہور چار یاپانچ گھنٹے میں مری پہنچ توجاتے ہیں لیکن پارکنگ کی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے کئی گھنٹے گاڑیوں میں موقوف ہوکر رہ جاتے ہیں گاڑیوں کی لمبی قطاریں مسافروں کوشدید تھکادیتی ہیں حکومت پنجاب اس معاملے پر فوری توجہ دے ان خیالات کا اظہار نوید احمدعباسی نے اپنے بیان میں کیا انہوں نے کہا کہ مری اموٹر وے سے تھوڑی دور لوئرٹوپہ کے مقام پارکنگ بنائی جائے اور مال روڈ تک بس سروس شروع کی جائے جو ہر آدھے گھنٹے بعد پارکنگ سے مال روڈ اورمال روڈ سے واپس پارکنگ تک چلائی جائے پہاڑی علاقے میں 50 ہزار گاڑیوں کی پارکنگ بناناناممکن ہے اسلئے پارکنگ مری سٹی سے باہر ہونی چائیے جی ٹی روڈکیلئے پارکنگ بانسرہ گلی میں تعمیر کی جائے تاکہ مری کا پارکنگ کا دیرنہ مسئلہ حل ہوسکے۔

کیٹاگری میں : Uncategorized

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں