87

صحابہ کرامؓ معیار ایمان ہیں،مقدس شخصیات کی توہین کسی بھی سطح پر ناقابل قبول ہے،وزیراعظم پوری قوم کے سامنے توہین صحابہ پر معافی مانگے

مری صحابہ کرامؓ معیار ایمان ہیں،مقدس شخصیات کی توہین کسی بھی سطح پر ناقابل قبول ہے،وزیراعظم پوری قوم کے سامنے توہین صحابہ پر معافی مانگے،مسلم سٹودنٹس آرگنائزیشن پاکستان قومی اور بین الاقوامی سطح پر مقدس شخصیات کی ناموس کے تحفظ کے لیے جدوجہد جاری رکھے گی،ان خیالات کا اظہار مسلم سٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے زیراہتمام نکالی جانے والی “شجاعت صحابہؓ طلبہ واک ” سے رانا ذیشان ناظم اعلیٰ MSOپاکستان،ملک مظہر جاوید،محسن خان،شہزاد عباسی،سردار مظہر،وسیم صدیقی اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کیا،یادرہے کہ شجاعت صحابہؓ طلبہ واک نماز جمعہ کے بعد لال مسجد تاآبپار ہ چوک کیا گیا جس میں مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد سمیت دینی وعصری تعلیمی اداروں کے طلبہ نے بھر پور شرکت کی جب کہ شرکاء نے پلے کارڈ اٹھارکھے تھے،جن پر صحابہ کرام کی شان اور عظمت کے حوالے سے نعرے درج تھے۔تفصیلات کے مطابق ایم ایس او پاکستا ن کے زیر اہتمام شجاعت صحابہؓ طلبہ واک سے خطا ب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ صحابہ کرام اہل اسلام کے ایمان کا محور ومرکز ہیں،مقدس شخصیات کی ناموس کے حوالے سے کمزوری ناقابل قبول ہے،انہوں نے اس بات پر زوردیا کہ وزیر اعظم کی صحابہ کرامؓ کے حوالے سے غیر معیاری گفتگو ناقابل قبول ہے،وہ پوری قوم سے معافی مانگیں۔مقررین نے ایوان بالا اور پارلیمان میں ممبران کی طرف سے ناموس صحابہ ؓپر جاندار گفتگو کو سراہتے ہوئے مطالبہ کیا کہ عوامی نمائندے ناموس صحابہؓ کے حوالے سے قانون سازی میں اپنا فیصلہ کن کردار ادا کریں،مقررین نے مقتدر حلقوں پر زور دیا کہ انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی کے طالب علم،صحافی وسوشل میڈیا ایکٹیوسٹ محمد بلال خان شہید کے قاتلوں کو فی الفور گرفتار کرکے قاتلوں کو واقعی سزا دیں تاکہ انصاف کا بول بالا ہو سکے۔مقررین نے مصری معزول صدر ڈاکٹرمرسی ؒ کی دوران حراست وفات پر گہرے غم وغصہ کااظہار کیا۔

کیٹاگری میں : Uncategorized

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں