85

جہلم سے تعلق رکھنے والے نوجوان کے برطانیہ میں انتقال کے بعد ان کی نماز جنازہ چھپراں میں ادا کر دی گئی

جہلم(چوہدری سہیل عزیز)جہلم سے تعلق رکھنے والے نوجوان کے برطانیہ میں انتقال کے بعد ان کی نماز جنازہ چھپراں میں ادا کر دی گئی،نصراللہ بٹ کی نمازجنازہ میں سیاسی،سماجی و صحافتی شخصیات کے علاوہ سینکڑوں افراد نے شرکت کی،میت کو انگلینڈ سے پی آئی اے کی فلیٹ سے اسلام آبا د پہنچایاگیا،تفصیلات کے مطابق دس سال سے انگلینڈ میں مقیم جہلم کے نواحی گاؤں چھپراں سے تعلق رکھنے والے نصراللہ بٹ جو کہ دل کے عارضہ میں مبتلا تھے انگلینڈ کے ہسپتال میں دو روز قبل انتقال کر گئے تھے جن کی میت کو گزشتہ صبح اسلام آباد ایئر پورٹ پر پہنچایا گیا ان کی میت جب گاؤں چھپراں پہنچی تو اس وقت رقت آمیز مناظر تھے ہر آنکھ اشکبار اور علاقہ کی فضا سوگوار تھی میت کے ساتھ ان کی بیوی اور دو بچے بھی آئے کیونکہ نصراللہ بٹ نے شوشل میڈیا پر پاکستانی حکومت سے دوران علاج اسے اس کی بیوی اور بچوں سے ملانے کی اپیل کی تھی اس کے بعد میڈیا کی خبروں کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر جنرل آصف غفور نے اس کے بیو ی بچوں کو انگلینڈ پہنچانے کے لیے انتظام کیا تھا نو سال سے انگلینڈ میں مقیم نصراللہ بٹ کو دل کا شدید دورہ پڑ ا جس کے بعدان کا دل صرف بیس فیصد کام کررہا تھا اور برطانوی ڈاکٹروں نے نصراللہ بٹ کا مرض لاعلاج قرار دے دیا تھا۔نصراللہ بٹ کی نماز جنازہ کے بعد ان کے جسد خاکی کو ان کے آبائی قبرستان میں سپرد خاک کر دیاگیا نماز جنازہ کے بعد نصراللہ بٹ کے بھائی اور دیگر رشتہ داروں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم میڈیا،پاک فوج اور حکومت پاکستان کے انتہائی مشکور ہیں کہ جنہوں نے نصراللہ بٹ مرحوم کے بیوی بچوں کو ان کی زندگی میں ملاقات کی خواہش پوری کروا دی،یاد رہے کہ نصراللہ بٹ برطانیہ جانے سے قبل سماجی اور صحافتی حلقوں میں اپنے فلاحی کاموں کی وجہ سے معروف تھے انہوں نے اپنے علاقہ میں فلاحی کاموں کے لیے ویلفیئر سوسائٹی بھی قائم کی ہوئی تھی۔

کیٹاگری میں : Uncategorized

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں