25

آئی جی کی کھلی کچہری

IG open court

اسلام آباد وفاقی پولیس کے آٸی جی محمد احسن یونس نے شہریوں کے مسائل سننے کے لیے کھلی کچہری کا انعقاد تو کیا۔مگر شہری نہ ہونے کے برابر ہیں۔کیوں کہ آئی جی اسلام آباد شہریوں کے مسائل کے حل کے لیے شہریوں کو انہی افسران کے پاس انکوائری کے لئے بھیج دیتے ہیں۔جن سے انصاف نہ ملنے پر شہری آئی جی کی کھلی کچہری میں جاتے ہیں۔آئی جی کی کھلی کچہری شہریوں کے لیے بے سود نکلی۔پولیس اہلکار کی درخواست پر اسلام آباد پولیس کے تمام غازیوں کو ایک ماہ کی تنخواہ کے برابر اعزازیہ دینے کے احکامات جاری کردئیے۔آئی جی اسلام آباد محمد احسن یونس کا سنٹرل پولیس آفس میں کھلی کچہری سے خطاب۔ مگر سننے والے نہ ہونے کے برابر لوگ ہیں۔

تفصیلات کے مطابق آئی جی اسلام آباد محمد احسن یونس نے کھلی کچہری کا انعقاد کیا جس میں 06شہریوں اور پولیس اہلکاروں نے اپنے مسائل پیش کئے۔آئی جی اسلام آباد محمد احسن یونس نے شہریوں اور پولیس ملازمین کے مسائل سنے اور متعلقہ افسران کو بروقت ازالے کے لئے بذریعہ ٹیلی فون احکامات جاری کئے انہوں نے افسران کو مارک شدہ درخواستوں پر دیئے گئے ٹائم فریم میں قانونی کاروائی کرکے رپورٹ پیش کرنے کے احکامات جاری کیے۔انہوں نے ایک پولیس اہلکار کی درخواست پر اسلام آباد پولیس کے تمام غازیوں کے لئے ایک ماہ کی تنخواہ کے برابراعزازیہ دینے کے احکامات بھی جاری کئے۔آئی جی اسلام آباد نے تمام ایس ایچ اوز کو 3 بجے سہ پہر سے شام5 بجے تک تھانے میں موجود رہنے اور عوامی شکایات سننے کی بھی ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ شہریوں کی جان و مال کی حفاظت ہماری اولین ذمہ داری ہے ان کی عزت نفس کا پورا خیال رکھیں۔ان کے تمام تر مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کریں۔کھلی کچہری میں آنیوالے شہری قابلِ عزت ہیں۔افسران شہریوں کو سنتے ہوئے انتہائی مثبت رویہ اپنائیں۔شہریوں اور پولیس کے درمیان دوستانہ ماحول برقرار رکھنے کے لئے انہیں عزت دی جائے.انھوں نے زونل افسران کو ہدایات جاری کیں کہ قبضہ مافیا کے خلاف فوری اور سخت ایکشن لیا جائے۔اسلام آباد پولیس کسی شخص کی جائیداد پر ناجائز قبضہ کی ہرگزاجازت نہیں دے گی۔انھوں نے مزید کہا کہ روزانہ کی بنیاد پر کھلی کچہری کا انعقاد کرنے کا مقصدکمیونٹی پولیسنگ کو فروغ دینا اور شہریوں کے مسائل ترجیحی بنیادوں پرحل کرنا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں