black day 31

نیشنل پریس کلب کی کال پر راولپنڈی کیمپ آفس میں یوم سیاہ منایا گیا

راولپنڈی : فلسطینی عوام اورمیڈیا ہاؤسز پر اسرائیلی فوج کی جارحیت اور انسانیت سوز حملوں خلاف نیشنل پریس کلب کی کال پر راولپنڈی کیمپ آفس میں یوم سیاہ منایا گیافلسطینی عوام سے اظہار یکجہتی کے لئے منگل کے روزنیشنل پریس کلب کے اراکین کے علاوہ زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد خواتین اور بچوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی اس موقع پر پریس کلب پر فلسطینی و پاکستانی پرچموں کے علاوہ سیاہ پرچم لہرائے گئے جبکہ شرکا نے اسرائیلی جارحیت کے خلاف شدید احتجاج کیا اس موقع پر شرکا نے”سبیلنا سبیلنا،الجہاد الجہاد، یہودیوں کا علاج الجہاد الجہاد،اسرائیل کا جو یار ہے غدار غدار ہے،امریکہ اسرائیل گٹھ جوڑ نامنظور کے نعرے لگا رہے تھے“اس موقع پرنیشنل پریس کلب کے صدر شکیل انجم،پی ایف یو جے کے سابق صدر افضل بٹ،پریس کلب کے سیکریٹری انور رضا،سینئر صحافی رانا غلام قادر،خبیب فاؤنڈیشن کے چیئر مین محمد خبیب،جماعت اسلامی پنجاب کے سیکریٹری جنرل اقبال خان، تحریک انصاف کے ڈویژنل سیکریٹری جنرل عارف عباسی،ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن راولپنڈی کے صدر سردار عبدالرازق،ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن راولپنڈی کے ایگزیکٹو ممبرملک صالح ایڈووکیٹ،اآل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن کے مرکزی نائب صدر شہزاد منظور کیانی،پنجاب ٹیچرز یونین کے صدر چوہدری یاسین،پرائیوٹ سکول مینجمنٹ ایسوسی ایشن کے ضلعی صدرابرار احمدخان،انجمن تاجران پنجاب کے صدر شاہد غفور پراچہ،انجمن تاجران پنجاب کے صدرشرجیل میر، پرائیوٹ سکولز اینڈ کالجز ایسوسی ایشن کے صدر راجہ الیاس کیانی، ممتاز عالم دین علامہ اظہار بخاری، تحریک صوبہ پوٹھوہارنرگس گل اور سینئر صحافی بابر ملک نے بھی خطاب کیا مقررین نے کہا کہ اسرائیل کی موجودہ جارحیت کے بعداب وقت آگیا ہے کہ کئی دہائیوں سے جاری مسئلہ فلسطین کو اب منطقی انجام تک پہنچایا جائے اب وہ دن دور نہیں کہ نہ صرف فلسطینی آزاد فضا میں سانس لیں گے بلکہ بلکہ مسجد اقصی سے بھی اللہ اکبر کی صدائیں بلند ہو ں گی انہوں نے مطالبہ کیا کہ او آئی سی کے علاوہ اقوام متحدہ میں شامل آزادی کے علمبردار تمام ممالک اپنا کردار ادا کریں مقررین نے حکومت پاکستان سے بھی مطالبہ کیا کہ مظلوم نہتے فلسطینیوں کی حمائیت کے لئے عالمی برادری پر اپنا دباؤ بڑھائے اورخارجی سطح پر فوری کردار ادا کرے مقررین نے کہا کہ اپنی ناجائز اولاداسرائیل کے ذریعے فلسطین میں مظالم کے پہاڑ تورنے اور قبلہ اول پرقبضے کے خواب دیکھنے والا امریکہ یہ جان لے کہ اس کا جو حشر افغانستان میں ہوا تھا اس سے برا حشر ہونے والا ہے فلسطین میں 1ہفتے کے دوران200کے قریب مردو خواتین اور بچے شہید اور2ہزار سے زائدزخمی ہو چکے ہیں لیکن اسرائیل یہ جان لے کہ اب فلسطین اس کے لئے تر نوالہ ثابت نہیں ہو گا جس طرح امریکہ کے لئے افغانستان اس کا قبرستان ثابت ہوا تھا اسی طرح فلسطین بھی اسرائیل کا قبرستان ثابت ہو گا۔