132

وزیر اعظم پاکستان عمران کا دورہ مری مقامی صحافی برادری کو مدعو نہ کیا گیا

وزیر اعظم پاکستان عمران کا دورہ مری مقامی صحافی برادری کو مدعو نہ کیا گیا

صحافی برادری کو اس لیے روکا گیا کہ بلک واٹر، جنگلات اور کرپشن پر سوالات نہ کرسکیں

مری وزیراعظم عمران خان کی مری آمد۔لینٹر۔ٹمبر۔شاملاتی زمینوں کا کاروبار کرنے والوں نے خوش آمدید کہا کے اس موقع پرمری میڈیا نمائندگان کو فرائض منصبی ادا کرنے سے دور روک دیا گیا۔وزیر اعظم کی آمد کے موقع پر کرونا ایس او پیز کی دھجیاں اڑا کر رکھ دی گئیں۔میڈیا نمائندگان نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان کو مری میں جاری بے ہنگم تعمیرات۔جنگلات کی کٹائی۔اور قبضے۔اور بلک واٹر سپلائی سکیم۔اور دیگر عوام کو ان ڈھائی سالوں میں درپیش مسائل و تکالیف سے آگاہ کرنا تھا۔مگر تحریک انصاف کی قیادت نے حلقہ میں وزیر اعظم کے منشور کی جو دھجیاں اڑائی جا رہی ہیں اس حوالہ سے وزیر اعظم عمران خان کو کہیں میڈیا نمائندگان آگاہ نہ کر دیں انتظامیہ کے ذریعہ سے میڈیا نمائندگان کو ہی روکے جانے کی روایات برقرار رکھی گئی ہے۔اس سے قبل وزیر اعلی پنجاب کی مری آمد کے موقع پر بھی لوکل میڈیا نمائندگان کو روکا گیا تھا۔
مری کی صحافی برادری سے پریس کلب کوٹلی ستیاں، پریس کلب کہوٹہ ،پریس کلب کلرسیداں اور صحافتی تنظیموں نے اظہار یکجہتی کا اظہار کیا موجودہ حکومت کے دور میں میڈیا سے سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا جارہا ہے این اے 57 کے صداقت علی عباسی خود کو میڈیا کا اینکر پرسن سمجھتے ہیں اور مقامی صحافی برادری کے ساتھ ان کا رویہ قابل مذمت ہے اس لیے آئندہ الیکشن میں اس کا رزلٹ واضع ہوگا پنجاب حکومت کے تمام پروجیکٹ کا کریڈٹ خود لینا چاہتے ہیں جب کہ علاقہ کی ترقی کے لیے کوٹلی ستیاں، کلرسیداں اور کہوٹہ سے ان کی طرف سے یکسر نظرانداز کیا جارہا ہے