Mary 68

نواز شریف سے پیسے نکوالنے گئے لیکن لینے کے دینے پڑ گئے: مریم

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ حکومت نواز شریف سے پیسے نکوالنے گئی لیکن انہیں لینے کے دینے پڑ گئے۔

نائب صدر مسلم لیگ ن مریم نواز کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا حکومت نے ڈسکہ میں منظم دھاندلی کی، 6، 6 گھنٹے پولنگ اسٹیشنز پر پولنگ معطل رہی، ووٹرز کو پولنگ سست کرکے ووٹنگ کے عمل سے باہر رکھا گیا، ہمیں این اے 75 کے 20 حلقوں میں نہیں پورے حلقے میں دوبارہ الیکشن چاہئیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ضمنی الیکشن سے متعلق ہمارے پاس ناقابل تردید شواہد موجود ہیں، الیکشن کمیشن ڈسکہ اور پاکستان کے عوام کو انصاف فراہم کرے، کون کون دھاندلی میں ملوث ہے سب جانتی ہوں، میں انتظار کر رہی ہوں یہ سچ بتا دیں ورنہ حقائق عوام کے سامنے لانے پڑیں گے۔

براڈ شیٹ کیس کے حوالے سے بات کرتے ہوئے مریم نواز کا کہنا تھا کہ براڈ شیٹ جعلی حکومت کو بے نقاب کر رہا ہے، نواز شریف سے پیسے نکوالنے گئے لیکن لینے کے دینے پڑ گئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ قومی خزانے کو آٹا، چینی اور بجلی چوروں نے نقصان پہنچایا ہے، پاکستان کے عوام کے پیسے انھوں نے انتقام کی نذر کیے گئے۔

پرویز رشید کے کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے نائب صدر مسلم لیگ ن کا کہنا تھا دنیا کو معلوم ہے پرویز رشید کو سینیٹ سے کیوں باہر رکھا گیا، جو حق کا ساتھ دیتے، جھکنے سے انکار کرتے ہیں ان کے ساتھ ایسا ہی سلوک ہوتا ہے۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ سینیٹ الیکشن سے متعلق میرا اصولی مؤقف ہے کہ سینیٹ الیکشن سے متعلق قانون میں ترمیم جعلی حکومت نہیں پارلیمنٹ کرسکتی ہے۔

حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت منظور ہونے کے حوالے سے مریم نواز کا کہنا تھا اللہ کا شکر ہے حمزہ شہباز کی ضمانت ہو گئی ہے، حمزہ نے پارٹی کے لیے قربانیاں دیں اور پارٹی کے ساتھ کھڑا رہا، ان کی بہت کمی محسوس کی، حمزہ رہا ہو گا تو ہم ایک اور ایک گیارہ ہو جائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کی حکومت کو ہر موڑ پر رسوائی کا سامنا ہے، عوام نے نوشہرہ میں بھی مسلم لیگ ن کو بھاری اکثریت سے ووٹ دیا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں مریم نواز نے کہا کہ اپنے خلاف نیب نوٹسز کا سنا، پھر شاید وہ دھند میں غائب ہو گئے، میں نہیں ڈرتی، پہلے بھی انھوں نے ناحق مجھے جیل میں رکھا۔