Educational Institutions 37

پرائمری، سیکنڈری اسکول، کالج اور یونیورسٹیاں کھل گئیں

پرائمری، سیکنڈری اسکول، کالج اور یونیورسٹیاں کھل گئیں تعلیمی اداروں کے داخلی دروازے پر واک تھرو جراثیم کش اسپرے گیٹ نصب
کراچی سمیت ملک بھر میں پرائمری، سیکنڈری اسکول، کالج اور یونیورسٹیاں کھل گئیں، تعلیمی اداروں کے داخلی دروازے پر واک تھرو جراثیم کش اسپرے گیٹ نصب کیے گئے ہیں۔ملک کے تمام تعلیمی اداروں میں پیر سے تعلیمی سلسلہ مکمل بحال ہو گیا ہے پہلی سے آٹھویں جماعت، ہائیر ایجوکیشن اور جامعات میں بھی پڑھائی کا آغاز ہو گیا ہےپورے ملک میں تعلیمی اداروں کی انتظامیہ کو کورونا وائرس کی ایس او پیز پر عمل درآمد کا پابند کیا گیا ہےاسکولوں کے دروازے پر بچوں کا تھرمل گن سے درجہ حرارت چیک کیا جارہا ہے، بچوں نے ماسک پہنے ہوئے ہیں، کلاسوں میں جانے سے پہلے بچوں کے ہاتھ سینیٹائز کرائے جا رہے ہیں۔تعلیمی ادارے تقریباً سال بھر کورونا کیسوں میں اضافے اور کمی کے ساتھ کلّی یا جزوی طور پر بند رہے، اسکول آنے والے بچوں نے کہا کہ آن لائن سے زیادہ کلاس میں بیٹھ کر پڑھنا اچھا لگتا ہے، ہم اپنے دوستوں اور ٹیچرز کو یاد کر رہے تھےکراچی، لاہور، حیدرآباد سمیت دیگر شہروں میں نصف طلبہ کی حاضری کے ساتھ تعلیمی ادارے کھلے ہیں گزشتہ دنوں وفاقی وزیرِ تعلیم شفقت محمود نے اعلان کیا تھا کہ ملک بھر میں تمام پرائمری اسکول اور جامعات کھول رہے ہیں، کورونا وائرس کی وجہ سے پہلے ہی تعلیم کا بہت نقصان ہو چکا ہے۔واضح رہے کہ نویں تا بارہویں جماعت تک تعلیمی سلسلہ 18 جنوری سے شروع ہوگیا تھا