Typhoid 71

ٹائیفائیڈ کے حفاظتی ٹیکوں کی مہم کا افتتاح

راولپنڈی : پاکستان پیڈیاٹرک ایسوسی ایشن فیڈرل برانچ کے صدر اور راولپنڈی میڈیکل یونیورسٹی کے پروفیسر ڈاکٹر رائے اصغر نے بے نظیر بھٹو ہسپتال میں بچے کو پہلا انجکشن لگا کر ٹائیفائیڈ کے حفاظتی ٹیکوں کی مہم کا افتتاح کر دیا ۔ انہوں نے کہا کہ والدین اس مہم سے اپنے بچوں کو بروقت ٹائیفائیڈ کا حفاظتی ٹیکہ لگوا کر بھرپور فائدہ اٹھائیں ۔یہ مہم حکومت پاکستان کا ایک انقلابی قدم ہے ۔ اس مہم میں 9 ماہ سے 15 سال کے بچوں کو ٹائیفائیڈ کے حفاظتی ٹیکے یکم فروری سے 15 فروری تک لگائے جائینگے ۔ یہ ویکسینیشن ایک جدید کنجوگیٹیڈ ویکسین ہے جو کہ چھوٹے بچوں کو بھی لگائی جا سکتی ہے ۔ اور انتہائی موثر ہے اس کا اثر بھی لمبے عرصے تک رہتا ہے ۔ پاکستان میں بچوں میں ٹائیفائیڈ کی بیماری بہت عام ہے جس کی وجہ صاف پانی ،صاف خوراک کے نہ ہونے کے ساتھ سینی ٹیشن کا معیاری نہ ہونا شامل ہے ۔ اسکے علاوہ ٹائیفائیڈ بخار میں موجودہ انٹی باٹکس بے اثر ہو تی جا رہی ہے ۔ اس لیے اس کو ایم ڈی آر ٹائیفائیڈ بھی کہتے ہیں ۔ ٹائیفائیڈ بخار میں بچے کو انتہائی تیز نہ اترنے والا بخار ہوتا ہے جو کہ جسم کے ہر حصے کو متاثر کر سکتا ہے ۔ ٹائیفائیڈ سے بچاو کے تین اہم اصولوں میں ابلا ہوا صاف پانی ، صاف خوراک اور صابن سے ہاتھ دھونے کے علاوہ حفاظتی ٹیکے بھی شامل ہیں ۔