pm of pakistan 16

احساس ’’کوئی بھوکا نہ سوئے‘‘ اقدامات پر بریفنگ

اسلام آباد وزیراعظم عمران خان نے مستحق افراد کو کھانا فراہم کرنے کی تجاویز کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ ایسے علاقوں کی نشاندہی کو ترجیحی بنیادوں پر یقینی بنایا جائے جہاں لوگ معاشی مشکلات کا شکار ہو کر دو وقت کی روٹی سے محروم ہیں، جامع منصوبہ بندی سے ایسا نظام لایا جائے جس سے مستحقین تک رسائی براہ راست اور آسان ہو، احساس ’’کوئی بھوکا نہ سوئے‘‘ پروگرام کامیابی کے بعد نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں اپنی مثال آپ ہوگا۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار بدھ کو احساس ’’کوئی بھوکا نہ سوئے‘‘ اقدامات پر بریفنگ کے سلسلہ میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں وزیراعظم کی معاونِ خصوصی برائے تخفیفِ غربت و سماجی تحفظ ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے وزیرِ اعظم کو منصوبے پر تفصیلی بریفنگ دی۔ وزیرِ اعظم کے وژن کے مطابق احساس کے ذریعے غذائی قلت کے خطرے سے دوچار علاقوں کی نشاندہی کرکے منظم حکمتِ عملی کے تحت کھانے کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا۔ وزیرِ اعظم نے مستحق افراد کو کھانا فراہم کرنے کیلئے پیش کی گئی تجاویز کو سراہتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ ایسے علاقوں کی نشاندہی کو ترجیحی بنیادوں پر یقینی بنایا جائے جہاں لوگ معاشی مشکلات کا شکار ہو کر دو وقت کی روٹی سے محروم ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ جامع منصوبہ بندی سے ایسا نظام لایا جائے جس سے مستحقین تک رسائی براہ راست اور آسان ہو۔ وزیرِ اعظم نے مزید کہا کہ احساس ’’کوئی بھوکا نہ سوئے‘‘ پروگرام کامیابی کے بعد نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں اپنی مثال آپ ہوگا۔ اس کے علاوہ ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے وزیرِ اعظم کو احساس ڈونر م مینجمنٹ سسٹم پر بھی بریفنگ دی جس کے ذریعے انفرادی اور اداروں کی سطح پر مرضی کے مطابق عطیات دینے کے ساتھ ساتھ اس کے خرچ کی تفصیل خودکار اور ڈیجیٹل طریقے سے ڈونر تک جا سکے گی، اس نظام کی مکمل تیاری کے بعد اس کا آغاز رواں سال کی پہلی سہ ماہی کے اختتام تک کر دیا جائے گا۔