Election Commission 25

الیکشن کمیشن آف پاکستان کا اہم اجلاس

الیکشن کمیشن آف پاکستان کا اہم اجلاس چیف الیکشن کمشنر جناب سکندر سلطان راجہ کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں ممبران الیکشن کمیشن ، سیکرٹری الیکشن کمیشن ،سیکرٹری لوکل گورنمنٹ پنجاب ، ڈائریکٹر ملیٹری لینڈ کنٹونمنٹ اور دیگر افسران نے شرکت کی۔
اجلاس میں سیکرٹری الیکشن کمیشن نے الیکشن کمیشن کو بریف کیا کہ لوکل گورنمنٹ ایکٹ اور ویلج و پنچائیت ایکٹ، 4 مئی 2019ء کو نافذ العمل ہوگیا تھا ۔صوبائی گورنمنٹ قانون کے مطابق 21 مہینوں کے اندر صوبہ میں لوکل گورنمنٹ کے ادارے قائم کرنے کی پابند ہے اور الیکشن کا انعقادقانون کے مطابق 3 فروری 2021ءسے پہلے ہونا ضروری ہے۔ بلدیاتی الیکشن کے انعقاد کے سلسلے میں حکومت پنجاب کی جانب سے کئے جانے والے اقدامات کا جائزہ لیا گیا ۔ الیکشن کمیشن کے استفسار پر سیکرٹری لوکل گورنمنٹ پنجاب الیکشن کے انعقاد کی تاریخوں اور ویلج وپناہئیت کے ناموں کے حوالے سے کوئی تسلی بخش جواب نہیں دے سکے۔جس پر الیکشن کمیشن نے برہمی کا اظہار کیا ۔
الیکشن کمیشن نے حکومت پنجاب کو ہدایت کی کہ ویلج اور پنچائیت کونسلوں کے ناموں کی منظوری 10 جنوری 2021ء تک کروائے بصورت دیگر الیکشن کمیشن ویلج اور پنچائیت کونسلوں کی پرانے ناموں پر حلقہ بندیوں کی اشاعت کردے گا۔ مزید برآں الیکشن کی تاریخوں کے حوالے سے مشاوراتی ا جلاس مورخہ 6 جنوری 2021ء کو الیکشن کمیشن سیکرٹریٹ طلب کرلیا ہے ۔ جس میں بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے تاریخوں کے اعلان کے سلسلے میں قانونی مشاورت کے لئے حکومت پنجاب سے نمائندہ بھیجنے کے احکامات جاری کئے۔
الیکشن کمیشن نے دفتر کو بھی ہدایت کی الیکشن میں حصہ لینے کے خواہشمند الیکٹورل گروپس کی رجسٹریشن کافوری آغاز کیا جائے تاکہ جلدازجلد الیکشن کے انعقاد کو یقینی بنایا جا سکے۔
کنٹونمنٹ الیکشن کے انعقاد کےحوالے سے ڈائریکٹرملٹری لینڈکنٹونمنٹ نے الیکشن کمیشن کو بتایا کہ منسٹری آف ڈیفنس نے فیڈرل گورنمنٹ کو سمری بھیجی ہے کہ فیڈرل گورنمنٹ سیکشن 58(2) کنٹونمنٹ آرڈیننس 2002کےتحت الیکشن کمیشن کو الیکشن کے انعقاد سے متعلق استدعا کرے اس پر الیکشن کمیشن نے 15روز کا وقت دیا ہے کہ معاملہ کی اہمیت کو سامنے رکھتے ہوئے منسٹری آف ڈیفنس متعلقہ سطح پر ضروری اقدامات اٹھائے۔