Voters' Day 60

قومی ووٹرز ڈے

کراچی:الیکشن کمیشن آف پاکستان کی ہدایات پر ملک بھر کی طرح 7دسمبر 2020؁ء بروز پیر کو قومی ووٹرز ڈے کے سلسلے میں صوبہ سندھ میں صوبائی مرکزی تقریب کا انعقاد دفتر صوبائی الیکشن کمشنر سندھ میں کیا گیا، ممبر الیکشن کمیشن سندھ محترم جناب نثار احمد دُرانی صاحب بطور مہمان خصوصی شرکت کی، اس کے علاوہ صوبائی الیکشن کمشنر سندھ اعجاز انور چوہان، جوائنٹ صوبائی الیکشن کمشنر سندھ سید وسیم احمد جعفری، ڈائریکٹر صوبائی الیکشن کمشنر سندھ پرویز احمد کلہوڑو، ریجنل الیکشن کمشنر کراچی سید ندیم حیدر، ہیڈکوارٹرز کے افسران، مختلف این جی اوز اور سی ایس اوز نے شرکت کی۔
مرکزی تقریب میں ممبر الیکشن کمیشن سندھ نثار احمد درانی اور صوبائی الیکشن کمشنر سندھ اعجاز انور چوہان نے مہمانان گرامی کو خراج تحسین پیش کیا۔ دوران خطاب ممبر الیکشن کمیشن سندھ نثار احمد درانی نے کہا کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان اپنی خود مختاری اور آئین میں درج ذمہ داریوں سے عہدہ برآہ ہونے کیلئے مسلسل کوشاں ہے اور قومی ووٹرز ڈے منانا بھی اِس سلسلے کی ایک اہم کڑی ہے، انتخابات کا پُر امن، منصفانہ اور غیر جانبدارانہ انعقاد کو یقینی بنانے کیلئے انقلابی اقدامات اُٹھائے گئے ہیں اور چیف الیکشن کمشنر کی رہنمائی اور قیادت میں آئین میں درج اختیارات نیز الیکشن ایکٹ 2017 کے تحت جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جارہا ہے، الیکشن کمیشن انتخابات کے جمہوری عمل کو اُمیدواروں کیلئے سہل بنانے اور غیر جانبدار رکھنے کیلئے مختلف منصوبوں پر کام کررہا ہے ممبر الیکشن کمیشن سندھ نے کہا کہ صوبہ سندھ میں کُل رجسٹرڈ ووٹوں کی تعداد 2,43,51,681ہے۔ جس میں خواتین رائے دہندگان کی تعداد 1,09,07,367اور مرد رائے دہندگان کی تعداد 1,34,44,314 ہے۔ کچھ شہری علاقوں میں مرد و خواتین رجسٹرڈ ووٹرز کے درمیان فرق 10فیصد سے زیادہ ہے۔ اِس سلسلے میں پائلٹ پروجیکٹ کا پور ے ملک میں انعقاد کیا گیا۔ صوبہ سندھ کے اضلاع گھوٹکی، لاڑکانہ، ٹھٹھ، کراچی غربی اور کراچی ملیر اس پروجیکٹ کا حصہ تھے۔ پروجیکٹ جواب تحقیقی اور تجزیاتی عمل کے آخری مراحل میں ہے اور اس کے مطلوبہ نتائج سے ووٹ کے فرق میں ممکنہ حد تک کمی کرنے میں مدد ملے گی۔ اِس موقع پر جناب اعجاز انور چوہان، صوبائی الیکشن کمشنر سندھ نے کہا کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان نے خواتین اور معذور افراد پر ہمیشہ خاص توجہ دی ہے۔خواتین ووٹرز کی تعداد بڑھانے کیلئے الیکشن کمیشن نے ضلعی ووٹرز ایجوکیشن کمیٹی بنائی ہیں، جو ہر ماہ اضلاع میں وقتاً فوقتاً ووٹرز آگاہی مہم کے سلسلے میں مختلف پروگرام کا انعقادکررہی ہیں اور نادرا کے اشتراک سے صوبے بھرمیں (موبائل رجسٹریشن وینز) پسماندہ علاقوں میں پہنچائی گئی ہیں جس سے خواتین ووٹرز کی تعداد میں کئی گنا اضافہ ہوا ہے۔ اِنہی کاوشوں کی بدولت عام انتخابات کے موقع پر خواتین ووٹرز نے زیادہ تعداد میں ووٹ ڈالے۔
صوبائی الیکشن کمشنر سندھ اعجاز انور چوہان نے شریک مہمانان گرامی سے مزید کہا کہ الیکشن کمیشن خواتین کی اہمیت کو جانتے ہوئے ووٹنگ کے عمل میں اُن کی شمولیت بڑھانے کیلئے قانون سازی کے ساتھ ساتھ عملی اقدامات بھی کررہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ عوام الناس میں ووٹ کی اہمیت زیادہ سے زیادہ اُجاگر کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ کسی بھی ملک کی ترقی کا دارو مدار صاف و شفاف الیکشن پر مبنی ہے۔ لہٰذا اِس قومی فریضے میں ہر شخص کو بڑھ چڑھ کر حصہ لینا چاہئے۔ آج کے دن ہم سب نے یہ عہد کرنا ہے کہ ووٹ ایک مقدس قومی فریضہ اور ہماری ذمہ داری ہے۔ اِس قومی فرض کی ادائیگی کے بغیر ہم بحیثیت قوم ترقی کی تیز رفتار منازل طے کرنے سے قاصر رہیں گے۔ الیکشن کمیشن آف پاکستان کی یہ خواہش اور کوشش ہے کہ ووٹر کے اندراج سے لیکر ووٹ کاسٹ کرنے تک تمام امور میں شراکت کو بڑھایا جائے اور ہر صورت ووٹ کاسٹ کرنے کی شرح کو معقول حد تک لایا جائے، پولنگ اسٹیشنز کی تعداد بڑھانے، ٹیکنالوجی کے استعمال اور خواتین کے ووٹ کاسٹ کرنے کی حوصلہ افزائی کیلئے خاص طور پر اقدامات کئے جارہے ہیں۔ اِس سلسلے میں زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد ووٹرز کے اندراج سے لیکر ووٹ ڈالنے کے عمل میں شرکت کو بڑھانے کیلئے سب کا تعاون درکار ہے۔ ہمیں گھر گھر اِس آواز کو پہنچانا ہے کہ ووٹ کی طاقت کو استعمال کرنا ہے۔