Shah Mahmood 21

اپوزیشن کیساتھ مذاکرات کیلئے تیار ہیں، شاہ محمود

ملتان: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے حکومت اپوزیشن کی سرگرمی کو زبردستی نہیں روکے گی، ہم قومی معاملات پر ان کے ساتھ مذاکرات کیلئے تیار ہیں۔

شاہ محمود قریشی نے کہا استعفے دینے ہیں تو دیں، کس نے روکا ہے۔ انہوں نے کہا ملک میں ہیلتھ ایمرجنسی کا نفاذ ہے، اپوزیشن دوہرے معیارسے پرہیز کرے۔ اس میں آپ کا اور ملک کا فائدہ ہے، ہم نے سیاسی انداز سے آگے بڑھنا ہے۔

وزیرخارجہ نے کہا کہ اپوزیشن کے ساتھ مذاکرات کے دروازے کھلے ہیں۔ ملکی مفادات کے ساتھ این آر او کو نہ جوڑیں۔

ان کا کہنا تھا کہ یوسف رضا گیلانی اپنے الزامات کو ثابت کریں، شاہ محمود قریشی نے ملتان میں پی ڈی ایم کے جلسے کو ناکام قرر دیتے ہوئے کہا اسے تقریب کا نام دیا جائے تو زیادہ مناسب ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ یوسف رضا گیلانی نے نامناسب اور حقائق کے برعکس بات کی۔ سامنے آکر بتائیں میں نے پکڑ دھکڑ یا کسی کی تضحیک کی ہو، لوگ سیاسی ضرورت کے تحت بیان بازی کرتے ہیں۔ کوئی الزامات لگانا چاہتا ہے تو میں روک نہیں سکتا۔

انہوں نے کہا جلسے ہوتے رہے ہیں اور ہوتے رہیں گے۔ سیاسی عمل کو کوئی محدود نہیں کرسکتا۔ ہمارا موقف ہے یہ عمل انسانی جانوں سے کھیلنے کے متراد ف تھا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ملتان میں کورونا مریض بڑھ گئے ہیں۔ یہ صورتحال ہماری غفلت کے باعث پیش آئی۔ہم اپنے اہلخانہ ،دوست اور عزیز واقارب کو بھی متاثر کررہے ہیں۔

پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ لوگ ایس او پیز پر عمل نہیں کر رہے۔ کورونا کے باعث صورتحال مزید سنگین ہوسکتی ہے، ہر شخص سے گزارش ہے اپنے اوپر احسان کریں۔