17th China ASEAN Expo 74

سترھویں چائنہ آسیان ایکسپو میں پاکستان کے 14 کاروباری اداروں کی شرکت خوش آئند ہے، ڈاکٹر عارف علوی

اسلام آباد:صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہاہے کہ 17 ویں چائنہ آسیان ایکسپو میں پاکستان کی جانب سے 14 کاروباری اداروں کی شرکت خوش آئند ہے، چینی صدر شی جن پنگ کی قیادت میں چین نے بہت اعتماد کے ساتھ کورونا وائرس پر قابو پایا ، اس ایکسپو کا انعقاد ثابت کرتا ہے کہ چین نے تجارت کے شعبے میں دنیا کو قیادت فراہم کی ہے، چین پاکستان اقتصادی راہداری سے وسطی ایشیائی ممالک کے ساتھ رابطہ قائم ہوگا ۔ ایوان صدر کے میڈیا ونگ سے جاری بیان کے مطابق ان خیالات کااظہارانہوں نے جمعہ کو چین کے شہر ناننگ گوانگشی میں 17 ویں چائنہ آسیان ایکسپو کی تقریب سے ورچوئل خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صدر مملکت نے کہا کہ ایکسپو میں پاکستان کی جانب سے 14 کاروباری اداروں کی شرکت خوش آئند ہے۔ چینی صدر شی جن پنگ کی قیادت میں چین نے بہت اعتماد کے ساتھ کورونا وائرس پر قابو پایا۔ انہوں نے کہا کہ اس ایکسپو کا انعقاد ثابت کرتا ہے کہ چین نے تجارت کے شعبے میں دنیا کو قیادت فراہم کی ہے۔ چین کا مشرقی ایشیائی ممالک کے ساتھ حال ہی میں کیا جانے والاسب سے بڑا تجارتی معاہدہ چین کے ایک قابلِ اعتماد تجارتی پارٹنر ہونے کا ثبوت ہے۔ پاکستان اور چین قابل اعتماد دوست ہیں اور یہ دوستی سمندروں سے گہری اورہمالیہ سے اونچی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری سے وسطی ایشیائی ممالک کے ساتھ رابطہ قائم ہوگا ۔ پاکستان اور چین نے تجارتی معاہدے کے دوسرے مرحلے پر دستخط کیے ہیں جو جنوری 2020 سے فعال ہے۔ ہم پاکستان کے خصوصی اقتصادی زون میں آسیان ممالک کو سرمایہ کاری کرنے کی دعوت دیتے ہیں۔ پاکستان کی میکرو معاشی پالیسیوں میں زبردست تبدیلی رونما ہوئی ہے۔ صدرمملکت نے کہا کہ پاکستان میں کاروبار کرنے میں آسانی پیدا ہوئی ہے اور کورونا کے باوجود کاروبار میں بہتری آئی ۔ ہماری دور رس معاشی اور تجارتی اصلاحات کی وجہ سے اچھے نتائج برآمد ہوئے ۔ پاکستان کو چین اور آسیان ممالک کو ٹیکسٹائل ، اشیاء خورونوش، گوشت ، سبزیاں وغیرہ برآمد کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان فیفا ورلڈ کپ کے لئے فٹ بال بنا رہا ہے۔ پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے کے بہت سارے مواقع موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی آسیان ممالک کے ساتھ شراکت داری اور تعاون میں اضافہ ہورہا ہے۔