Federal Minister for Maritime Affairs, Ali Haider Zaidi called on President Dr. Arif Alvi at Aiwan 9

میڈیا اور لیڈی ہیلتھ ورکرز کے ذریعے بریسٹ کینسر سے متعلق آگہی پھیلانے کی ضرورت

اسلام آباد۔صدر ڈاکٹر عارف علوی کی اہلیہ بیگم ثمینہ عارف علوی نے کہا ہےکہ میڈیا اور لیڈی ہیلتھ ورکرز کے ذریعے بریسٹ کینسر سے متعلق آگہی پھیلانے کی ضرورت ہے، بریسٹ کینسر کی بروقت تشخیص سے اس کا علاج ممکن ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز(پمز) کے دورہ کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔بیگم ثمینہ عارف علوی نے فیڈرل بریسٹ کینسر سکریننگ سینٹر اسلام آباد میں بریسٹ کینسر سے متعلق انتظامات کا جائزہ لیا۔ انہوں نے کہا کہ فیڈرل بریسٹ کینسر سکریننگ سینٹر بروقت تشخیص اور علاج کی بہترین سہولیات فراہم کر رہا ہے۔ بیگم ثمینہ عارف علوی نے کہا کہ میڈیا اور لیڈی ہیلتھ ورکرز کے ذریعے بریسٹ کینسر کے متعلق آگہی پھیلانے کی ضرورت ہے، بریسٹ کینسر کی بروقت تشخیص سے اس کا علاج ممکن ہے۔
انہوں نے کہا کہ مسلح افواج کے میڈیکل شعبہ کی جانب سے چھاتی کے کینسر سے متعلق ڈیٹا کلیکشن پر پیشرفت کے بارے میں سویلین ہسپتالوں کے علاوہ آغا خان ہسپتال کو آگاہ کیا جانا چاہئے۔ انہوں نے ڈاکٹروں، میڈیکل پریکٹیشنرز اور لیڈی ہیلتھ ورکرز پر زور دیا کہ وہ باقاعدہ بنیادوں پر خواتین میں چھاتی کے کینسر سے متعلق آگاہی پیدا کرنے کیلئے کردار ادا کریں۔ پمز کے شعبہ آنکالوجی کے سربراہ ڈاکٹر قاسم نے کہا کہ یہ مرکز 2015 میں قائم کیا گیا، اس میں ملک بھر سے آنے والے مریضوں کو مفت علاج کی سہولت فراہم کی جاتی ہے۔ چھاتی کے کینسر سے متعلق قومی آگاہی مہم کی وزارت صحت کی فوکل پرسن ڈاکٹر عائشہ نے کہا کہ حکومت کا یہ ادارہ سماجی امتیاز کے بغیر مفت علاج کی سہولت فراہم کر رہا ہے۔ کینسر سے صحت یاب ہونے والی مریضوں گوہر سلطان اور عالیہ نے اس بیماری سے چھٹکارا سے پمز سنٹر میں علاج کے بارے میں آگاہ کیا۔ انہوں نے پمز ہسپتال کے علاج کے طریقہ کار پر اطمینان کا اظہار کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں