Muharram 13

محرام الحرام کے موقع پر حکومت تعاون کرے ، علامہ بشارت حسین امامی،،،

اسلام آباد محرم الحرام کے مہینہ میں اہل تشیع کو درپیش مسائل اور ذاکرین پر لگنے والی پابندیوں کے حوالے سے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے علامہ بشارت حسین امامی نے کہا کہ جیسے ہی ماہ محرم کا آغاز ہوتا ہے ذاکرین پر پابندیاں لگنی شروع ہو جاتی ہیں ، عزاداروں کیلئے رکاوٹیں کھڑی ہونی شروع ہو جاتی ہیں ،ملک بھر سے تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے کنٹرول رومز میں عزادارووں کے مسائل موصول ہورہے ہیں ، وفاق میں مئیر اور ڈپٹی میئر کے شکر گزار ہیں جنہوں نے کنٹرول سنٹر قائم کئے لیکن وزارت داخلہ میں تاحال محرم کنٹرول روم قائم نہیں کیا گیا اور نہ ہی اسے تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے ساتھ مربوط کیا گای ، جس کی وجہ سے ملک کے مختلف شہروں میں پیدا ہونے والے مسائل میں سے کچھ مسائل پیچیدگی اختیار کر رہے ہیں ، پنجاب کے اکثر اضلاع میں جلوسوں کو روک کر کہا جا رہا ہے کہ ان کا شیڈول انتظامیہ کے پاس موجود نہیں ہے ، بانیاں مجالس اپنے ریکارڈ لے کر پھر رہے ہیں لیکن انتظامیہ ان کو سننے کو تیار نہیں ،انہوں نے یہ بھی کہا کہ کچھ جگہ سے یہ شکایات بھی آ رہی ہیں کہ گھروں میں خواتین کی مجالس اور ماتمداریوں کو بھی روکا جا رہا ہے، جو انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے ، انہوں نے حکومت وقت سے اپیل کی کہ وہ ایسے اقدامات کو روکیں اور عزاداروں کے مسائل کا فوری حل کریں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں