By Usman Ali جون 8, 2024

وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز شریف نے کسانوں کے لیے تاریخی پیکیج کے تحت ’’پنجاب کسان بینک، گرین ٹریکٹر سکیم، آئل سیڈ پروموشن پروگرام کے ساتھ مقامی سطح پر ہارویسٹر اور زرعی آلات کی تیاری کا اعلان کیا ہے۔‘‘ وزیراعلیٰ مریم نواز شریف اور صدر مسلم لیگ (ن) محمد نواز شریف کی زیر صدارت اجلاس ہوا جس میں کسان پیکج پر جامع بریفنگ دی گئی۔ کسانوں کو نرم شرائط پر قرضے دینے کے لیے پنجاب کسان بینک کے قیام کا اصولی فیصلہ کیا گیا۔ کسانوں کے لیے "وزیراعلیٰ پنجاب گرین ٹریکٹر سکیم” کی بھی منظوری دی گئی۔ وزیراعلیٰ نے محض 10000 روپے کی تقسیم کے حوالے سے تجویز کو ٹھکرا دیا۔ ٹریکٹر پر 6 لاکھ کی سبسڈی۔ 

   وزیراعلیٰ نے چھوٹے ٹریکٹر پر 70 فیصد اور بڑے ٹریکٹر پر 50 فیصد سبسڈی دینے کی ہدایت کی۔ محمد نواز شریف کی تجویز پر پنجاب گرین ٹریکٹر سکیم کے تحت ٹریکٹرز کی تعداد میں 10 ہزار کا اضافہ کر دیا گیا ہے۔ وزیراعلیٰ مریم نواز شریف نے پنجاب گرین ٹریکٹر سکیم کا پہلا مرحلہ ایک سال میں مکمل کرنے کی ہدایت کر دی۔ پنجاب گرین ٹریکٹر سکیم کے تحت ہر سال ٹریکٹروں کی تعداد بڑھانے کا اصولی فیصلہ کیا گیا۔ بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ پنجاب گرین ٹریکٹر سکیم میں 6 ایکڑ سے 50 ایکڑ تک اراضی کے مالکان درخواست دینے کے اہل ہوں گے۔

   وزیراعلیٰ نے مقامی سطح پر تیار کئے جانے والے ہائی ٹیک میکانائزیشن پروگرام کی بھی منظوری دی۔ بین الاقوامی کمپنیاں مقامی کمپنیوں کے ساتھ مل کر پنجاب میں ہارویسٹر اور دیگر اوزار تیار کریں گی۔ اجلاس میں جدید ترین زرعی آلات کی تیاری کے لیے بین الاقوامی کمپنیوں کو مراعات دینے کی تجویز کا جائزہ لیا گیا۔ پنجاب میں آئل سیڈ پروموشن پروگرام شروع کرنے کی منظوری دے دی گئی جس کے تحت صوبے کے مختلف حصوں میں کاشتکاروں کو تیلدار خوردنی اشیاء تیار کرنے پر آمادہ کیا جائے گا۔

   وزیراعلیٰ نے کہا، “پنجاب کی تاریخ میں پہلی بار 100 روپے 400 ارب کا کسان پیکج دیا جا رہا ہے۔ کسان کارڈ کے ذریعے کسانوں کو زرعی آمدنی کے علاوہ دیگر مراعات اور سہولیات بھی دی جائیں گی۔ زرعی پیداوار میں اضافے کے ساتھ ساتھ ہر کسان کی خوشحالی ہمارے اولین کاموں کا حصہ ہے۔ اجلاس میں ٹیوب ویلز کی سولرائزیشن اور ڈرپ ایریگیشن سسٹم کے اجراء کا بھی جائزہ لیا گیا۔ شرکاء کو بتایا گیا کہ کسان کارڈ کے حصول کے لیے 48 گھنٹوں میں 47 ہزار کسان اپنی رجسٹریشن کے عمل سے گزر چکے ہیں۔

   اجلاس میں سینئر صوبائی وزیر مریم اورنگزیب، صوبائی وزراء صہیب احمد ملک، سید عاشق حسین، معاون خصوصی راشد نصر اللہ، چیف سیکرٹری زاہد اختر زمان، سیکرٹری زراعت افتخار سہو اور دیگر متعلقہ افسران نے شرکت کی۔

About Author

Related Post