malik mehmood akhutr 23

کرائم ڈائر ی

کرائم ڈائر ی

تحریر۔ ملک محمو د اختر سے

محکمہ مال کہوٹہ کا قبلہ درست نہ ہوسکا، کرپشن کے تمام ریکارڈ تو ڑ دیئے، محکمہ مال کے90فیصد ستائے عوا م لڑا ئی جھگڑوں اور عدالتوں کی نذ ر ہو گئے ہیں، حلقہ پٹوا ر کہوٹہ آج بھی کمپیو ٹر رائز نہ ہوسکا، رجسٹر ی، انتقا ل فیس وصو ل کرنے کے با وجود محکمہ مال کے بے لغا م پٹوا ریوں نے انتقال درج نہ کیئے اور پلا ٹ زمین فرو خت کرنے والے کے نا م زمین کا غذات میں بو لتے ہیں ایک پلا ٹ چار سے پا نچ مرتبہ فرو خت ہوا، محکمہ مال نے با اثر سیا سی قبضہ مافیا کی ملی بھگت سے سرکاری زمین دیدہ دلیر ی سے فرو خت کردی، ضلع را ولپنڈی کی تحصیل کہوٹہ میں محکمہ مال نے غریبوں اور بے سہارا لو گوں کی زمین جعلسا زیاں کرکے ہڑ پ کر گئے، سا را دن بو ڑھی عورتیں، مرد،پٹواریوں اور تحصیلداروں کے دفاتر کے باہر بیٹھے رہتے ہیں،مگرپرا پر ٹی ڈیلر اور سیا سی قبضہ مافیا نے تحصیل آفس اور پٹوا ریوں کے دفتروں پر قبضے جما لیئے ہیں،بے شما ر بیو اؤ ں اور یتیموں کی اراضی محکمہ مال نے خو رد بو رد کر دی اور وہ لو گ آپس میں لڑائی جھگڑے کرکے جیلوں میں بیٹھے ہیں، آج تک حلقہ پٹوا ر کہوٹہ کمپیو ٹر رائز نہ ہوسکا، اس کی وجہ یہ ہے کہ محکمہ مال کہوٹہ کی مہر بانی یا کرپشن یا بہمانی کی وجہ سے ایک پلا ٹ چار سے پانچ مرتبہ فرو خت ہوا، اگر یہ حلقہ کمپیو ٹر ائز ہو جائے تو درجنوں مردہ و زندہ پٹوا ری جیلوں میں جانے کے مستحق ہیں، اس لیئے محکمہ مال نے اس حلقہ کو کمپیو ٹر ائز نہ ہونے دیا،پو رے پا کستان میں اتنی کرپشن نہ ہوئی جتنی صرف تحصیل کہوٹہ حلقہ پٹوا ر کہوٹہ میں ہوئی، مگر آج تک کسی حکو مت نے ذمہ دار لوگوں کو کیفر کردا ر تک نہ پنچایا، تبد یلی سرکار نے اعلان کیا تھا مگر کہوٹہ کے پٹوا ریوں کے خلاف تبد یلی سرکار بھی بے بس ہے،یہ افسو س سے لکھنا پڑتا ہے کہ 90سے100سال کے بو ڑھے مرد خواتین دور دراز علاقوں سے کئی میل سفر کرنے کے بعد جب آتے ہیں تو محکمہ مال کے پٹوا ری حضرات انکو سردی میں گلی محلوں کی سرد گلیو ں میں بٹھا دیتے ہیں،آخر جواب ملتا ہے کہ پٹوا ری صا حب مصرو ف ہیں،انکا خالوفو ت ہوگیا ہے انکا تایا فو ت ہو گیا ہے،وہ ادھر چلے گئے،آپ کل آجاتا، جبکہ پٹوا ریوں کے منشی حضرات بے تاج بادشاہ بن چکے ہیں اند ر سے دوازے پٹوا ر خانوں کے بند کر کے پرا پر ٹی ڈیلروں اور سیا سی با اثر قبضہ ما فیا کے جائز نا جائز کا م کرتے ہیں، حیر ت کی با ت ہے کہ پٹوا ریوں نے تو کم عرصے میں بڑ ے بڑے بنگلے، زمینیں،مارکیٹیں خرید لی اور اپنے عز یز کے نام کروائی جبکہ منشی حضرات نے بھی کہوٹہ میں ڈبل سٹو ری مکانا ت اوردوکانات تعمیر کی ہوئی ہیں،سارا دن دوسرے حلقے کے منشی اور پٹوا ری جوکہ محکمہ مال کے بڑے آفیسروں کے کپڑے دھوتے ہیں وہ قیمتی ریکارڈ پر بیٹھے رہتے ہیں اور زمینوں کے ریکا ر میں جعلسا زیاں اور ردوبدل کر تے ہیں،عوامی و سماجی حلقوں نے وزیر اعظم پا کستان عمران خان،وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار، کمشنر را ولپنڈی، ڈی سی اؤ را ولپنڈی اور محکمہ انٹی کرپشن اور محکمہ نیب سے اپیل کی ہے کہ اس کرپشن کا نو ٹس لیا جائے اور تما م پٹوا ریوں کو ضلع بد ر کیا جائے۔