مسلم لیگ (ن) کے ایم پی اے علاقے کا نام غلط کہنے پر ایک دوسرے سے گلے شکوے کرتے ہیں۔

لاہور:

پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) کے سابق سپیکر پنجاب اسمبلی رانا محمد اقبال نے محکمہ ماحولیات کے بارے میں پوچھے گئے اپنے سوال میں پھول نگر کے ایک علاقے کو "بھائی پھیرو” کہنے پر اپنی ہی پارٹی کے رکن اسمبلی محمد طاہر پرویز کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

صورتحال اس وقت دلچسپ ہو گئی جب اقبال نے پی ٹی آئی کے موجودہ سپیکر سبطین خان سے سوال کو مسترد کرنے کی درخواست کی اور واضح کیا کہ ماضی میں اسمبلی نے اس نام کو "پھول نگر” کے نام سے منظور کیا تھا۔

اس نے گھر کو مزید مطلع کیا کہ "اگر پھول نگر کو بلایا گیا یا بھائی پھیرو لکھا گیا تو وہ عدالت جائیں گے”۔

مزید پڑھیں: پی ٹی آئی نے عمران کے خلاف ‘مذہبی منافرت’ پھیلانے پر حکومت پر تنقید کی۔

پرویز نے اپنے سینئر ساتھی کی جانب سے اپنے سوال کو مسترد کرنے کی درخواست پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ اس معاملے پر ان کے سوال کو کیسے نظر انداز کیا جا سکتا ہے۔

اقبال نے بھی طاہر کے ریمارکس پر ردعمل کا اظہار کیا۔ تاہم، اسپیکر خان نے مداخلت کی اور کہا کہ اقبال سینئر قانون ساز ہیں اس لیے ان کی درخواست پر سوال نہیں اٹھایا جائے گا۔ مسلم لیگ ن کے باقی قانون سازوں نے مزید دلائل سے بچنے کے لیے طاہر کو بیٹھنے کا اشارہ کیا۔

آخر کار، مذکورہ سوال پر توجہ نہیں دی گئی۔


ِ
#مسلم #لیگ #کے #ایم #پی #اے #علاقے #کا #نام #غلط #کہنے #پر #ایک #دوسرے #سے #گلے #شکوے #کرتے #ہیں

(شہ سرخی کے علاوہ، اس کہانی کو مری نیوز کے عملے نے ایڈٹ نہیں کیا ہے اور یہ خبر ایک فیڈ سے شائع کیا گیا ہے۔)

جواب دیں