مسافر گاڑی سے لدا ٹرک الٹنے سے 13 افراد جاں بحق ہوگئے۔


لاہور:

رحیم یار خان کے فیروزہ میں ہفتہ کو چینی اور گندم کی بوریوں سے بھرا ٹرک مسافر کوچ سے الٹنے سے خواتین اور بچوں سمیت 13 افراد جاں بحق اور 5 زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق حادثہ کافی عرصے سے گڑھے اور ٹوٹ پھوٹ کا شکار سڑک پر پیش آیا۔

حادثہ اس وقت پیش آیا جب مخالف سمت سے آنے والا ٹرک ٹوٹی سڑک پر اپنا توازن کھو بیٹھا اور بارش کے پانی سے بھری گہری کھائی میں پھنسی ویگن کے اوپر جا گرا۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ ٹرک کے نیچے سے ملبہ ہٹانے کے لیے بھاری سامان استعمال کیا گیا۔

ریسکیو 1122 کے اہلکاروں نے بتایا کہ بس میں 18 افراد سوار تھے۔ ان کے مطابق 13 لاشیں اور پانچ زخمیوں کو فیروزہ کے رورل ہیلتھ سینٹر لے جایا گیا۔

ڈپٹی کمشنر سید موسیٰ رضا نے جانی نقصان پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے متعلقہ حکام کو زخمیوں کو بہترین طبی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی۔

ڈپٹی کمشنر نے خانپورہ، فیروزہ اور لیاقت پور کے علاقوں کے ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی۔

اس دوران علاقہ مکینوں نے جائے حادثہ پر پہنچنے والی لیاقت پور اسسٹنٹ کمشنر کی گاڑی پر پتھراؤ کیا۔ انہوں نے شکایت کی کہ فیروز میں جس سڑک پر حادثہ پیش آیا وہ گزشتہ چند سالوں سے سیوریج کی وجہ سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے لیکن حکام اس کو نظر انداز کر رہے ہیں۔

انہوں نے علاقے میں ہونے والے حادثات کا ذمہ دار محکمہ صحت اور ہائی ویز اور کونسلروں کو ٹھہرایا۔

وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی نے حادثے پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے جاں بحق افراد کے لواحقین سے دلی ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔

رحیم یارخان میں خستہ حال سڑکوں اور کھلے کچرے کی وجہ سے اکثر حادثات ہوتے رہتے ہیں۔

جون میں، ٹلی-مہاتما روڈ پر اسٹیٹ ٹیکنیکل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کے قریب ایک شخص اور اس کے دو نابالغ بچے اس وقت ہلاک اور دوسرا زخمی ہوا جب اس کی موٹر سائیکل کھلی ہوئی ہیچ میں گر گئی۔

ریسکیو 1122 کے مطابق کلیم اللہ اپنے تین بچوں کے ساتھ موٹر سائیکل پر گھر جا رہا تھا۔ جب وہ سوئی گیس چوک کے قریب پہنچا تو اس کی موٹر سائیکل کھلی ہوئی ہیچ میں گر گئی۔ حادثے کے نتیجے میں دو کمسن بچے موقع پر ہی جاں بحق اور تیسرا زخمی ہوگیا۔



#مسافر #گاڑی #سے #لدا #ٹرک #الٹنے #سے #افراد #جاں #بحق #ہوگئے

جواب دیں