مختلف طور پر معذور افراد کو ذہنی لچک بڑھانے پر زور دیا گیا۔

اسلام آباد:

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقی اور خصوصی اقدامات احسن اقبال نے مختلف معذور یونیورسٹیوں کے طلباء کو مشورہ دیا ہے کہ وہ زندگی میں کامیابی حاصل کرنے کے لیے ذہنی لچک پیدا کریں۔

وفاقی وزیر بدھ کو ایچ ای سی سیکرٹریٹ میں ‘یونیورسٹی طلباء کے لیے وزیراعظم کی الیکٹرک وہیل چیئر’ کے آخری مرحلے کے تحت طلباء میں الیکٹرک وہیل چیئرز کی تقسیم کے سلسلے میں منعقدہ تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔

تقریب کے دوران 50 طلباء کو الیکٹرک وہیل چیئرز دی گئیں۔ 2017 میں شروع کی گئی اسکیم کے پہلے مرحلے میں، جسمانی طور پر معذور یونیورسٹی کے طلباء کو 206 الیکٹرک وہیل چیئرز فراہم کی گئیں، جب کہ دوسرے مرحلے میں 159 وہیل چیئرز طلباء کے حوالے کی گئیں۔

احسن اقبال نے اسٹیفن ہاکنگ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ’ذہنی صلاحیتوں کا استعمال نہ کرنے والا صحت مند شخص بے کار ہے، جب کہ جسمانی طور پر معذور شخص جو اپنے دماغ کو استعمال کرتا ہے وہ بڑی کامیابیوں کی نشاندہی کرسکتا ہے‘۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کے مستقبل کا دارومدار وقت پر درست فیصلے کرنے پر ہے کیونکہ کوئی بھی غلط فیصلہ ملک کا مستقبل داؤ پر لگا سکتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر صبر، استقامت اور پالیسیوں میں مستقل مزاجی کا فقدان ہو تو ملک کی ترقی رک جاتی ہے۔

ایکسپریس ٹریبیون میں 11 مئی کو شائع ہوا۔ویں، 2023۔


ِ
#مختلف #طور #پر #معذور #افراد #کو #ذہنی #لچک #بڑھانے #پر #زور #دیا #گیا

(شہ سرخی کے علاوہ، اس کہانی کو مری نیوز کے عملے نے ایڈٹ نہیں کیا ہے اور یہ خبر ایک فیڈ سے شائع کیا گیا ہے۔)